مقام افسوس:بھاگ ورنہ آدمی کی موت مارا جائے گا

Submitted by lovme2008 on Sun, 03/21/2010 - 16:47

مقام افسوس   بھاگ ورنہ آدمی کی موت مارا جائے گا۔                                محمود ارشد وٹو 03425305788                                                                                          آج کل جو کچھ ہمارے اردگرد ہو رہا ہے وہ روز روشن کی طرح واضح ہے مگر ہم ہیں کہ طوطا چشمی اختیار کیے ہوئے ہیں۔دہشت گردی،لاقانونیت،رشوت،سفارش،قتل وغارت،بےایمانی جیسے غیر اخلاقی و غیر قانونی ناسور ہمارے معاشرے کو دیمک کی طرح چاٹ رہے ہیں اور ہم یاجوج ماجوج کی طرح اپنی ہی دیواروں کو چاٹ چاٹ کار کھوکھلا کر رہے ہیں۔کسی نے کیا خوب کہا تھا کہ کوا چلا ہنس کی چال اور اپنی بھی بھول گیا۔یہی کچھ ہمارے ساتھ ہوا ہے کہ ہم تو مسلم ہوتے ہوئے غیر اقوام کی طرز معاشرت کو اپناتے اپناتے اپنی لیتڑوں پوتڑوں سے بھی گئے۔ہم کس کے ہاتھ پر اپنا لہو تلاش کریں کہ ہماری تہذیب نے خود اپنے ہی خنجر سے خودکشی کی ہے۔مذہب کو دیکھو تو وہ بھی آخری سانسیں لی رہی ہے،سیاست دیکھو تو ہمارے ملک کی سیاست اس لونڈی کی مانند ہے جس کے ساتھ ہر تہذہب کے لونڈے نےہم بستری کی ہے،کسی لیڈر کی ماں بہن کو کچھ ہو جائے یا کچھ بھی ہو جائے وہ عوام کو سڑکوں پر لے آتے ہیں اور عوام کو الو بنا کر اپنا الو سیدھا کر لیتے ہیں۔اور بچاری غریب عوام ہر بار ڈسی جاتی ہے۔آج کل مہنگائی کا وہ عالم ہے کہ غریب تو غریب ایک سفید پوش طبقہ بھی گھٹ گھٹ کرجی رہا ہے۔گذشتہ دنوں راولپنڈی اسلام آباد میں ٹرانسپورٹ کرایوں میں ہوشربا اضافہ کے خلاف عوام اور پولیس کے درمیان بارہ کہو،فیض آباد اور مری روڈ میدان جنگ بنا رہا۔آخر گورنمنٹ کو کرایہ نامہ منسوخ کرنا پڑا اور وہ بھی ایک سیاسی بیان دے کر،نتیجتاً ٹرانسپورٹروں نے ہڑتال کر دی۔عجیب آوے کا آوہ بگڑا ہوا ہے۔یہ وہ سنہری موقع تھا کہ مختلف چھوٹی موٹی تنظمیں ان کے ساتھ مل کر ملک گیر احتجاجی مظاہرے کرتے اور اپنےیعنی عوامی حق کے لئے سڑکوں پر نکل آتے مگر ھیف ہے ایسی قوم پر جو ایک لیڈر کے ذاتی مفاد کو اپنا مفاد سمجھ کر تو سڑکوں پر نکل آتی ہے مگر اپنے حق کے لیے ایک لیڈر کو اپنے ساتھ سڑک پرنہیں لا سکتی۔مجال ہے جو اس دن کوئی ایک لیڈر سڑک پر آیا ہو اور غریب عوام کی سرپرستی کی ہو،کتنی بے وقوف ہے عوام جو انہی لیڈروں کے پیچھے اپنے جانیں تک دے دیتے ہیں،اور یہ وہ لیڈر ہیں جو روز بروز بڑھتی مہنگائی پر صرف ایک آدھ سیاسی بیان دینے کے علاوہ کچھ نہیں کر سکتےبلکہ کچھ کرنا نہیں چاہتے کیونکہ ان کو عوام سے نہیں اپنی اپنی کرسی کی فکر ہے۔خدارا اے میری قوم ہوش میں آئو اور الو بننا چھوڑو اور روزبروز بڑھتی مہنگائی اور لاقانونیت کے خلاف اتحاد کرو اور ان سب لیڈروں کو سڑکوں پر لا کر احتجاج کرو جن کو تم نے ووٹ دیئے اور جن کےلئے تم نے خون بہایا ان کو ازمائو وہ کہاں تک عوام کے مسائل کو حل کرنے میں سنجیدہ ہیں ورنہ مٹ جائو گے اور بے حسی کی موت مر جائو گے۔                                                                                                                                          بھاگتے کتے نے اپنے ساتھی کتے سے کہا                  بھاگ ورنہ آدمی کی موت مارا جائے گا

Add new comment

CAPTCHA
This question is for testing whether or not you are a human visitor and to prevent automated spam submissions.
Copyright (©) 2007-2019 Urdu Articles. All rights reserved.
Developed By Solaxim Web Hosting and Development Services
Affiliates: Urdu Books | Urdu Poetry | Shahzad Qais | Urdu Jokes One Urdu| Popular Searches | XML Sitemap Partners: UrduKit | Urdu Public Library

Urdu Articles Is One Of The Largest Collection Of Urdu Articles On Different Topics. You can read articles on topics like parenting, relationship, politics, How to do Things, Shopping Reviews, Life Style, Cooking, Health and Fitness, Islam and Spirituality... You can also submit your articles to get free publicity and fame on your published work. Keep Smiling......