پاکستان کے سلگتے انگارے

arifmahi's picture

جیسا کہ ہم سب جانتے ہیں کہ پاکستان کے لیڈروں نے اور پاکستان کی اسٹیبلشمنٹ نے پاکستان کی سالمیت اور انسانی آزادی کو بالکل سلب کر کے رکھ دیا ہے کیونکہ انہوں نے پاکستان کو معاشی طور پر تباہ و برباد کر کے رکھ دیا ہے پاکستان کے عوام اس وقت مختلف انگاروں پر سلگ رہے ہیں۔

ان سلگتے انگاروں میں مہنگائی، بےروزگاری، رشوت ستانی ، دہشت گردی ، تعلیم کی کمی میں پاکستان کے لوگ روز بروز جل رہے ہیں۔ پاکستان میں روز آنیوالے مسائل اور سیاسی طور پر نت نئے طور طریقے جن میں عوام کے پیسوں کا سیاست پر بے دریغ استعمال اربوں ڈالر کے سرمائے کی لوٹ مار اور پیسوں کی لالچ میں قیمتی اثاثوں کی کوڑیوں کے بھاؤ نیلامی نے ہمارے معاشرے کو پست اور ناکارہ کر کے رکھ دیا ہے۔

پاکستان کا المیہ یہ ہے کہ یہیاں سیاسی حکومت کسی بھی صورت میں چلنے ہی نہیں دی جاتی یہی وجہ ہے کہ کچھ عناصر ہمیشہ پاکستان کے اقتدار پر بالا دستی رکھنا چاہتے ہیں کیا ستم ظریفی ہے کہ ہم سے بعد آزاد ہونیوالے ممالک کتنا ترقی کر چکے ہیں اور ہم کتنا پیچھے ہیں ترقی کی منازل میں پاکستان کی ایک کثیر تعداد غربت کی لکیر سے بھی نیچے زندگی گزارتے ہیں پاکستان کے اندر اگر کوئی ترقی کا سوچتا ہے یا بہتر منصوبہ بندی کرتا ہے تو اس کا حشر ذوالفقار علی بھٹو ، لیاقت علی خان ، ڈاکٹر عبدالقدیر خان ، میاں نواز شریف ، یا محترمہ بینظیر بھٹو جیسا ہو سکتا ہے۔

پاکستان کے ایک سابق وزیر خزانہ جناب محبوب الحق کو پاکستان کی اسٹیبلشمنٹ نے فراموش کیا اس کی بنائی ہوئی پالیسیوں کو نظرانداز کیا مگر تھائی لینڈ ،بنکاک میں اس کی بنائی ہوئی معاشی پالیسیاں آج بھی براقرار ہیں عوامی جمہوریہ چین کی مثال آپ کے سامنے ہے کیونکہ اس نے اپنی عوام کو خاطر خواہ ترقی کے لئے بہت زبردست اقدامات کئے آج وہ امریکہ کی اقتصادی پالیسیوں کو للکار رہا ہے۔ پاکستان کے عوام روٹی کپڑا اور مکان چاہتے ہیں مگر صرف نعروں سے نہیں عملی اقدامات کرنے کی ضرورت ہے ورنہ پاکستان کے عوام سلگتے انگاروں سے انقلاب لائیں گے جس کی نوید مجھے سنائی دے رہی ہے

This is an Urdu article about Pakistan problems by Arif Qureshi

Share this
No votes yet