غزل -(کوہ افغانی)

Submitted by Mohammad-Ilyas on Mon, 01/07/2013 - 03:10

غزل -(کوہ افغانی)

کوہ افغانی کے دیکھ نرالے ٹیلے
ہمیں لبھاتے ہیں آج یہ کالے ٹیلے

بدلیاں ٹوٹ ٹوٹ کے ڈالیں پردہ
پھر انکی اوٹ سے سر کو نکالے ٹیلے

رات کی ظلمت بھی ان پہ اگر چھائی ہو
پال کے رکھتے ہیں دامن میں اجالے ٹیلے

بابا رحمان وہ سوئے ہوئے کہتا ہے
تھام لے بیٹے اب تیرے حوالے ٹیلے

کھوئے جاتے ہیں سب ان بھول بھلیوں میں
شعلۂ عشق ، ھو حق کو سنبھالے ٹیلے

انہی پہاڑوں میں کٹتا ہے چلہ میرا
میری گناہوں کے ہیں یہ ازالے ٹیلے

شراب عشق سے شہر کے واعظ کو کیا
کہیں پڑ جائیں گے جان کے لالے ٹیلے

میں تیری گودی میں سر رکھ کے سوؤں گا
تو بھی آ مجھ سے دل کو لگا لے ٹیلے

چھوڑ کے عشق کی محفل، کدھر جاتا ہے
'خواجہ' بستی میں کیوں اترا، بلالے ٹیلے

Add new comment

CAPTCHA
This question is for testing whether or not you are a human visitor and to prevent automated spam submissions.
Copyright (©) 2007-2019 Urdu Articles. All rights reserved.
Developed By Solaxim Web Hosting and Development Services
Affiliates: Urdu Books | Urdu Poetry | Shahzad Qais | Urdu Jokes One Urdu| Popular Searches | XML Sitemap Partners: UrduKit | Urdu Public Library

Urdu Articles Is One Of The Largest Collection Of Urdu Articles On Different Topics. You can read articles on topics like parenting, relationship, politics, How to do Things, Shopping Reviews, Life Style, Cooking, Health and Fitness, Islam and Spirituality... You can also submit your articles to get free publicity and fame on your published work. Keep Smiling......