ایم کیو ایم کا وزیر اعظم

Submitted by siaksa on Fri, 06/25/2010 - 21:36

ایک غیر سرکاری ٹی وی چینل کے پروگرام میں ملک بھر کے عوام کی اکثریت نے اس راے کا اظھار کیا کہ ایم کیو ایم جو غریب اور متوسط طبقہ کی نمایندہ جماعت ھے۔ انے والے انتخاب میں اپنا وزیر اعظم لاسکتی ھے۔ ۶۵ فیصد راے دھندگان نے ایم کیو ایم کا وزیر اعظم بنانے کے حق میں اپنی راے کا اظھار کیا۔ ھماری تاریخ یہ بتاتی ھے کہ سیاست پر چند دولت مند اور جاگیر داروں کی اجارہ داری ھے۔ جن جماعتوں کو قومی جماعت تصور کیا جاتاھے، ان میں بھی دولت مند اور جاگیر داروں کا قبضہ ھے۔ قومی اور صوبای اسمبلیوں میں ان ھی کے نامزد نمایندوں کی اکثریت ھے۔ اب تو دونوں بڑی جماعتوں میں خاندانی اجارہ داری قایم ھوچکی ھے۔ اور منظم طور پر مورثی سیاست کو جمھوریت کے نام پر فروغ دیا جارھا ھے۔<?xml:namespace prefix = o ns = "urn:schemas-microsoft-com:office:office" />
 جن کارکنوں کے کندھے پر چڑھکر یہ اجارہ دار اسمبلیوں میں اور حکومت میں اھم عھدوں پر پھنچتے ھیں وہ روز اول کی طرح اب تک کارکن ھیں اور انکا کام جلسے جلوس اور مظاھروں میں حصہ لینا اور ان لوگوں کے لیے تالیاں بجانا ھے۔ انھیں ان کی خدمات کا صلہ نھیں مل سکا۔ اور اس وقت ان کارکنوں کی دل کی کیفنیت کیا ھوتی ھے۔ جب وہ اپنی جماعت کے مرکزی یا صوبای وزیروں سے ملنے جاتے ھیں تو انکو جواب ملتا ھے کہ ابھی صاحب مصروف ھیں۔ یہ مظلوم کارکن غم وغصہ کے سواہ کیا کرسکتے ھیں۔ چند کارکنوں نے تو خودکشی کی بھی کوششں کی جسے پولیس نے لوگوں نے ناکام بنادیا۔ بھت سے دولت مند اور جاگیر دار انتخاب میں کامیابی کے بعد اپنے حلقہ کا دورہ کرنا تو درکنار مھنیے یا سال میں ایک دفعہ کھلی کھچری لگانا بھی توھین سمجھتے ھیں۔
 
جھاں تک عام عوام کے مسایل کا تعلق ھے۔ ان پر کوی توجہ نھیں دیتا۔ صرف سیاسی نوعیت کے ایسے منصوبوں پر دلچسپی لی جاتی ھے جن سے سیاسی مفادات حاصل ھوسکیں۔ یوٹیلٹی بل کم ھونے چاھیے۔ عوام پر ٹیکس کا بوجھ کم سے کم ھونا چاھیے۔ زرعی ٹیکس لگا کر بڑے بڑے جاگیر داروں کو بھی ملکی بوجھ اٹھا نے کا موقع دینا چاھیے۔ بجلی اور گیس کی قیمتوں میں بار بار کے اضافہ پر کنڑول کرنا چاھیے۔ روز مرہ کی اور کھانے پینے کی اشیا پر اضافہ کے لیے کوی لحاعمل بنانا چاھیے۔ ملک کی ساری عوام تو سرکاری ملازم نھیں تو غیر سرکاری ملازموں نے کیا جرم کیا ھے جو ان کی تنخوھوں اضافہ نھیں کیا جاتا۔ یہ ایسے مسایل ھیں جس سے ملک کی تمام عوام کو پریشانی ھے۔ اور ان پر معاشی بوجھ بڑرھا ھے۔
 
جو جماعتیں عرصہ دراز سے حکمراں بنتی رھی ھیں، میڈیا کے ذریعہ ان کے کرتوت عوام کے سامنے اتے رھتے ھیں اور عوام بھی اچھی طرح سمجھ گیے ھیں کہ ان کے حکمرانوں کو عام عوام سے کوی ھمدردی نھیں وہ بس اپنے مسایل حل کرنے اور اپنی پھیلے سے بھاری بھرکم تجوریوں کو مزید بڑھانے
کے لیے اقتدار میںاتے ھیں۔ ایک بار بھی ایسا نھیں ھوا کہ انھوں نے عوام کی راحت کا کوی سامان کیا ھو۔ یھی وجہ ھے کہ عوام ان سے مایوس ھوچکے ھیں۔ اور کسی تیسری جماعت کو ازمانے کا سوچ رھے ھیں۔ ٹی وی چینل پر ۶۵ فیصد لوگوں نے ایم کیو ایم کا وزیر اعظم بنانے کے حق میں اپنا ووٹ دے کے کر نیے عوامی رجحان کی بھر پور عکاسی کی ھے۔ ان کا یہ فیصلہ تعمیری انقلاب کی نشان دھی
 کررھا ھے۔

Guest (not verified)

Mon, 07/12/2010 - 19:04

Mr. Saleem Ahmed Its a planed propaganda through all types of media To impose that MQM can do something for lower clas as they represent lower class leadership.

Its an Open Truth that MQM is a Terrorist Party and is working for different International agencies.

Thanks for your reply.
As you said that about (Propaganda)
So dear, there are two type of propaganda moving around us,
One presented MQM a Terrorist Party
Second is MQM is only Hope for us to Put Pakistan in Right Track.
Dear. As a Good Human and Pakistani it is our Duty to find out the Fact, which Propaganda is Correct? And to find out the Fact, we have to criteria, First look MQM rule which they doing for People of Pakistan. And look their positive role in Pakistani Polities. You are best judge only.
Don’t Believe on PROPAGANDA only. Come and Check your Self
Regards

Add new comment

Filtered HTML

  • Allowed HTML tags: <a href hreflang> <em> <strong> <cite> <blockquote cite> <code> <ul type> <ol start type='1 A I'> <li> <dl> <dt> <dd> <h2 id='jump-*'> <h3 id> <h4 id> <h5 id> <h6 id>
  • Lines and paragraphs break automatically.
  • Web page addresses and email addresses turn into links automatically.